M. Hameed Shahid

TimeLine Layout

نوفمبر, 2017

  • 27 نوفمبر

    عرفان جاوید|اندر کا آدمی

    پاکستان کے محمد حمید شاہد کا قدیم یونان کے انگور کے باغات اور اورحان پامُک کے استنبول سے کوئی تعلق نہیں یاشاید ہے ۔ تعلق کی جڑیں ممکن ہے، کہیں اور زمیں دوز پانیوں میں ہوں۔ ایک حُزن ہے، اُداسی ہے، المیہ کیفیت و احساس ہے جو اس کی تحریر …

    » مزید پڑھئیے
  • 18 نوفمبر

    آج

    نومبر 2017 18 نومبر  2017 اکتوبر 2017 7 اکتوبر  2017  ینگ ویمن رائیٹرز فورم کی افسانہ ورکشاپ میں اکتوبر 2017 6 اکتوبر  2017 حسنین نازش کے چین کے سفرنامہ کی راولپنڈی آرٹس کونسل میں تقریب میں ستمبر 2017 17 ستمبر  2017 ستمبر 2017 14 ستمبر  2017 اگست 2017 26 اگست …

    » مزید پڑھئیے
  • 16 نوفمبر

    معاشرے میں ادیبوں اور دانشوروں کا کردار |ٹی این ایس مکالمہ

    Role of intellectuals and writers in a society with TNS program “Live Doctor Abrar ke Sath”

    » مزید پڑھئیے
  • 5 نوفمبر

    میں اور میرا تخلیقی عمل |محمد حمید شاہد کی گفتگو

    اکادمی ادبیات پاکستان کے زیر اہتمام “ادیبوں سے ملئے” سلسلے کے پروگرام میں محمد حمید شاہد اپنے بارے میں اور اپنے تخلیقی عمل کے بارے میں گفتگو کر رہے ہیں ۔ اس تقریب میں اکادمی کے چئرمین ڈاکٹر محمد قاسم بگھیو کے علاوہ سینئر ادیبوں نے بھی محمد حمید شاہد …

    » مزید پڑھئیے
  • 2 نوفمبر

    “رات گئے”|PTV

    Raat Gaye: Ep 42 October24,2017 PTV HOME  Host: Ammar Masood Guests: M Hameed Shahid  Lubna Safdar Book Review: Wajahat Masood  Singer: Allah Dita Lonay Wala Produced & Directed by Mohsin Jafar      

    » مزید پڑھئیے

أكتوبر, 2017

سبتمبر, 2017

  • 29 سبتمبر

    ملتان : مکالمہ،ملاقاتیں اور کالم

    مکالمہ اور ملاقاتیں افسانہ نگار محمد حمید شاہد کی ڈاکٹر انوار احمد سے ملاقات یوں طے ہوئی کہ پہلے سب بہاوالدین ذکریا یونیورسٹی کے اردو ڈیپارٹمنٹ میں ڈاکٹر قاضی عابد کے دفتر چائے پئیں گے اور پھر وہاں طلبا و طالبات سے اردو فکشن پر مکالمہ ہو گا۔ یہ سب ہوا …

    » مزید پڑھئیے
  • 24 سبتمبر

    Sarwat Ali|Fiction of our age

    Sarwat Ali September 24, 2017 A collection of critical writings that evaluate fiction written in the past 30 years in this part of the world Hameed Shahid is one of the leading fiction writers in Urdu and his critical writings are of value primarily for this reason. He insists that the …

    » مزید پڑھئیے