M. Hameed Shahid

Blog Layout

جہدمسلسل کا نام کشورناہید|محمد حمید شاہد

کشور ناہید کی 80 ویں سالگرہ پر لکھی گئی خصوصی تحریر کیا آپ ایک ایسی خاتون کو جانتے ہیں جو 80 ویں سالگرہ منارہی ہیں مگر ایسی باہمت ہیں کہ ان پر رشک آتا ہے۔ وہ اپنے دکھوں پر کڑھتے رہنے  اور اپنی بیماری اور اکلاپے کا رونا رونے کی …

» مزید پڑھئیے

M.Hameed Shahid|Hurt to Breath

Hurt to breath _____ A fiction from Urdu literature, Written by: Mohammad Hameed Shahid, Translated by: Farooq Sarwar .Suddenly his mind diverted to his fatherNot only to his father, but the special part of the time too, when he was ready to dieHe completely lost himself in his thinking, like …

» مزید پڑھئیے

مِری گود میں دَم نکلے گا|محمد حمید شاہد

راہ دم تیغ پہ ہو کیوں نہ میرجی پہ رکھیں گے تو گزر جائیں گے وہ کھانسے، یوں نہیں جیسے کوئی مریض کھانستا ہے بلکہ یوں جیسے کوئی گفتگو کرنے والا، اپنے حلقوم تک آ چکی بات کو نئے رخ سے راہ دینے کے لیے ہلکا سا کھنگورا مارتا ہے،’’ہَک …

» مزید پڑھئیے

وبا کے دن اور اپنا مختیارا|محمد حمید شاہد

مجھے برسوں بعد اچانک مختیارا یادآیاتھا ۔ جی،اپنے والا مختیارا، وہ نہیں جو وزیر اعظم کے ترجمان ندیم افضل چن کی سوشل میڈیا پر لیک ہو کر وائرل ہونے والی وائس کال کی وجہ سے آپ سمجھ رہے ہیں ۔ میری یادداشت والے مختیارے کا تعلق میرے بچپن سے ہے …

» مزید پڑھئیے

ایک مسلسل زرگزشت|محمد حمید شاہد

سب کچھ ٹھیک تھا ۔ نجیب محسن وہاں عین برانچ کھلتے ہی پہنچ گیا تھا ۔ اپنی نئی پوسٹنگ پر جب سے وہ وہاڑی آیا تھا تواُس کی بیوی مائرہ کی سانسیں کچھ زیادہ ہی اُکھڑگئی تھیں ۔ مائرہ کے لیے جیسے کچھ بھی ٹھیک نہ ہو رہا تھا ۔ …

» مزید پڑھئیے

محمد حمید شاہد سے مکالمہ|عمر فرحت

کچھ تخلیقی عمل کے بارے میں افسانہ نگار، ناول نگار اور نقاد محمد حمید شاہد 23مارچ 1957ء کو پنجاب،پاکستان کے ضلع اٹک کے شہر پنڈی گھیب میں پیدا ہوئے ۔ ابتدائی تعلیم اپنے شہر، جب کہ ہارٹی کلچر کی اعلیٰ تعلیم زرعی یونیورسٹی فیصل آباد سے حاصل کی اور عملی …

» مزید پڑھئیے

کورونا اور قرنطینہ|محمدحمیدشاہد

ابھی ایک پیغام پڑھ ہی رہا تھا کہ ایک اور نوٹیفکیشن سیل کے ڈسپلے کے اوپر والے حصے میں نمودار ہوا۔نیا نوٹیفکشن پہلے پیغام کی طرح کووِڈ۹۱ کے بارے میں کوئی حکومتی اعلان نہ تھا، یہ ساتھ والے سیکٹر سے میرے ایک دوست کا واٹس ایپ تھا جس میں ایک …

» مزید پڑھئیے

وبا،بارش اور بندش|محمدحمیدشاہد

محمد حمید شاہد | وبا،بارش اور بندش گزر چکے دو دنوں میں تو جیسے جاڑا مڑ کر پھر سے آگیا تھا اورآتے ہی یوں ہڈیوں میں رچ بس گیاتھا کہ لگا اب یہ جانے کا نہیں۔ اپریل کا مہینہ آلگا تھا، ہم حکومتی اعلان کے مطابق لاک ڈاؤن کی وجہ …

» مزید پڑھئیے

وبا کےدن اورگندم کی مہک|محمد حمید شاہد

محمد حمید شاہد وبا کے دِن اور گندم کی مہک لمحہ لمحہ اذیت دے کر گزرتے ان دنوں کو ہمارے نظم نگار دوست مقصود وفا نے ”قید میں رکھے ہوئے دِن“ کہا ہے۔ قید میں رکھے ان دنوں میں ہم بھی قید ہیں اور ہمارا تخیل بھی۔اپنی حالت یہ ہے …

» مزید پڑھئیے