M. Hameed Shahid
Home / حدیث دیگراں / سید محمداشرف|مسلسل نیا پن:تکرارکی حد تک نیا پن

سید محمداشرف|مسلسل نیا پن:تکرارکی حد تک نیا پن

syed Ashraf
سید محمد اشرف

 

 

 

 

 

 

 

 


ایک خط

سید محمد اشرف بنا م محمد حمید شاہد

786/92 نئی دلی17.1.14/

محمد حمید شاہد صاحب،

سلام مسنون

“آدمی”

ان کہانیوں کو پڑھ کر آدمی پریشان ہو سکتا ہے ….ہو ا ۔

لفظ سنوارنے والے کو داد دے سکتا ہے …….دی ۔

مسلسل نئے پن … تکرار کی حد تک نئے پن کو محسوس کر کے دنگ ہو سکتا ہے…. وہ بھی ہوا ۔

بس ایک چیز نہیں ہوئی کہ ان کہانیوں کو پڑھنے کا حق ادا نہیں ہوا …. کوشش کے باوجود ابھی ان میں اور ڈوبنا ہے۔

آپ نے لفظوں کو کوٹ پیس کر سفوف بنا لیاہے اور کہانی کے چہرے پر جہاں چاہتے ہیں ، غازے کی طرح مل دیتے ہیں۔

کہیں کہیں یہ بھی مطالعے میں آیا کہ آپ غازے کی طرح چہرے پر نہیں ملتے بلکہ اپنے باہنر ناخنوں سے کہانی کی شریانوں کو چیر کر وہ سفوف کہانی کے لہو میں شامل کر دیتے ہیں۔

آپ کے پاس منظر بے پناہ ہیں اور ان کو ٹھیک ٹھیک بیان کرنے کے لیے بالکل مناسب لفظ آپ نے جانے کہاں کہاں سے اکٹھے
کر رکھے ہیں ۔ ان میں بہت سے لفظ تو خانہ ساز لگتے ہیں۔

ری تین کہانیوں کو آپ نے جان بوجھ کر کہانی بننے سے روکا ہے۔ صرف ایک ایک پیرا گراف اور لکھنا تھا ۔ لگتا ہے آپ پڑھنے والے کی توقع سے کچھ زیادہ کرنا چاہتے ہیں۔ ان کہانیوں کو مکمل کرنے میں کیا قباحت ہے۔یا یہ یونہی مکمل لگتی ہیں آپ کو؟۔

میں نے لمبے عرصے کے بعد ایک ایسی کتاب پڑھی جس میں دل،دماغ اور روح سب محو ہو
کر رہ گئے۔ مجھ پر ایسے وقت ماضی قریب میں بہت کم آئے
ہیں۔

اللہ آپ کو شاد رکھے ۔ آپ کے قلم کو آباد رکھے ۔ آمین۔ یہ دعائیں دل سے نکلی ہیں ۔

آپ کا

سید محمد اشرف

سید محمد اشرف بنا م محمد حمید شاہد 2
سید محمد اشرف بنا م محمد حمید شاہد 2
سید محمد اشرف بنا م محمد حمید شاہد 1
سید محمد اشرف بنا م محمد حمید شاہد 1



Related Links|Please Click to Visit

https://rekhta.org/ebooks/aadmi-mohammad-hameed-shahid-ebooks

ڈاکٹر توصیف تبسم|اثبات

پروفیسر فتح محمد ملک|بند آنکھوں سے پرے‘ جنم جہنم اور مرگ زار

امجد طفیل|محمد حمیدشاہد کے افسانے

محمد حمید شاہد کےپچاس افسانے

مرگ زار

جنم جہنم

بند آنکھوں سے پرے

(مٹی آدم کھاتی ہے (ناول

پارو

آدمی

About Urdufiction

یہ بھی دیکھیں

سید محمد علی|داستان محمد حمید شاہد

بظاہر اس داستان کا آغاز ۳۰ مئی ۲۰۱۵ء کو ہوا جب ہم محمد حمید شاہد …

اترك تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *